83

ڈی سی آفس ساہیوال میں ماہانہ ریونیو عوامی خدمت میٹنگ

ساہیوال (ساہیوال نیوز لائیو – یکم فروری 2021 – عقیل اشفاق) سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب بابر حیات تارڑ نے کہا ہے کہ عام آدمی کے محکمہ ریونیو سے متعلقہ مسائل اور شکایات کے حل کے لئے صوبے بھر میں قانون گوئی کی سطح پر 800 سے زائد دیہی مراکز قائم کئے جا رہے ہیں جن سے اراضی انتقالات اور رجسٹریوں کا عمل سہل ہو گا –

وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی خصوصی ہدایت پر ہر ماہ کی پہلی تاریخ کو صوبے کی تمام تحصیلوں میں منعقد ہونے والی ریونیو عوامی خدمت میٹنگز میں عوام کے 86 فیصد مسائل حل ہوئے ہیں جن میں 50فیصد سے زائد درخواستوں پر اسی روز کارروائی مکمل کی گئی-

انہوں نے یہ بات ڈی سی آفس میں ریونیو عوامی خدمت میٹنگ میں سائلین سے خطاب کرتے ہوئے کہی –

ڈپٹی کمشنر بابر بشیر، ایڈیشنل کمشنر کو آرڈی نیشن شفیق احمد ڈوگر، اے ڈی سی ریونیو اویس مشتاق، اسسٹنٹ کمشنر سرمد حسین اور اے سی ریونیو فضائل مدثر، پٹواری تک کے ریونیو ملازمین نے بھی شرکت کی –

میٹنگ میں 76افراد نے ریونیو سے متعلقہ مسائل کے حل کے لئے درخواستیں پیش کیں جن میں سے زیادہ تر کا تعلق حد براری کے مسائل، فرد کے عدم اجراء، وارثتی جائیداد کی تقسیم اور اراضی ریکارڈ سنٹر میں پیش آنے والی مشکلات سے تھا –

سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ نے کہا کہ ان دیہی مراکز کو پٹواری کی سطح تک بھی توسیع دی جائے گی جس سے عام آدمی اپنے کام مقامی سطح پر حل کروا سکے گا –

انہوں نے مزید بتایا کہ صوبے بھر میں تحصیلداروں اور نائب تحصیلداروں کی نئی بھرتی کاعمل بھی شروع کر دیا گیاہے اس سے افرادی قو ت کی کمی کی شکایات بھی دور ہونگی –

انہوں نے عوامی خدمت میٹنگ میں پیش ہونے والی شکایات کاجائزہ بھی لیا اور ریونیو افسران کو درخواستوں پر فوری کارروائی کرنے کی سختی سے ہدایت کی تا کہ ان اجلاسوں کامقصد حاصل ہو سکے-

قبل ازیں ڈپٹی کمشنر بابر بشیر نے سائلین کی درخواستوں کو ذاتی طورپر سنا اور متعدد کو موقع پر ریلیف فراہم کیا –

انہو ں نے ہاؤسنگ کالونیوں کی رجسٹریاں بند کرنے کی شکایات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ غیر منظور شدہ کالونیوں کی منظوری کاعمل جاری ہے جس سے رجسٹریوں کا مسائل حل ھونگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں